صفحۂ اول    ہمارے بارے میں    ہمارا رابطہ
پیر 23 جولائی 2018 

سیاسی جماعتیں انتخابات فوج کی نگرانی میں کرانے کا مطالبہ کرتی رہی ہیں، الیکشن کمیشن

نمائندہ خصوصی | جمعہ 13 جولائی 2018 

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) پاکستان الیکشن کمیشن کے سیکرٹری محمد بابر یعقوب نے واضح کیا ہے کہ پاک فوج کا عام انتخابات کے انعقاد میں کردار صرف سیکیورٹی کی حد تک محدود ہے، وفاقی دارالحکومت میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بابر یعقوب نے کہا کہ انتخابات فوج نہیں کروا رہی اور نہ ہی اس کا ان معاملات سے تعلق ہے، انہوں نے کہا کہ انتخابات الیکشن کمیشن کروا رہا ہے اور انتظامات کا  کنٹرول کمیشن کے پاس ہے، فوج صرف آئین کے مطابق اپنی ڈیوٹی سرانجام دے رہی ہے اور ان کا کردار صرف سیکیورٹی تک محدود ہے، ایک نجی ٹیلی ویژن کے مطابق بابر یعقوب نے یہ بھی کا کہ سیاسی جماعتیں خود عام انتخابات فوج کی نگرانی میں کروانے کے مطالبات کرتی رہی ہیں، انہوں نے کہا کہ الیکشن شفاف ہو گا، کوئی انگلی نہیں اٹھا سکے گا۔سیکرٹری الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے روز سیکیورٹی صورتحال پر بات کرتے ہوئے کہا کہ اٹھارہ ہزار کے قریب پولنگ سٹیشنز پر کیمرے لگائے جائیں گے، صوبائی حکومتوں نے کیمرے لگانے کے انتظامات کر لیے ہیں۔ ووٹرز کو پولنگ بوتھ میں موبائل کی اجازت نہیں ہو گی، تاہم اس بار میڈیا کو کیمرا اندر لے جانے کی اجازت ہو گی۔ ان کا کہنا تھا کہ پشاور دھماکے کے بعد خطرات تو موجود ہیں، سیکیورٹی کے حوالے سے صوبائی حکومتوں سے رابطے میں ہیں۔انہوں نے بتایا کہ سیاہی کی ترسیل بھی شروع ہو گئی ہے، 20 جولائی تک بیلٹ پیپر پرنٹ کر لیں گے، 24 جولائی تک پولنگ سٹیشنز پر سامان فوج کی نگرانی میں پہنچایا جائے گا۔ سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ 108 حلقوں کا ابھی فیصلہ آنا ہے، اس لیے بیلٹ پیپر ہولڈ پر رکھے ہیں، پنجاب کے چار اضلاع میں بیلٹ پیپر بھجوا چکے ہیں، بلوچستان کے بیلٹ پیپر کراچی میں پرنٹ ہو رہے ہیں۔

ہمارے بارے میں جاننے کے لئے نیچے دئیے گئے لنکس پر کلک کیجئے۔

ہمارے بارے میں   |   ضابطہ اخلاق   |   اشتہارات   |   ہم سے رابطہ کیجئے
© 2018 All Rights of Publications are Reserved by Daily Subh.
Developed by: SuperWebz.com
تمام مواد کے جملہ حقوق محفوظ ہیں © 2018 روزنامہ صبح۔