صفحۂ اول    ہمارے بارے میں    ہمارا رابطہ
پیر 23 جولائی 2018 

نوازشریف اور مریم آج لندن سے وطن واپس پہنچیں گے

این این آئی | جمعہ 13 جولائی 2018 

 لاہور( این این آئی)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد محمد نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز ( آج )جمعہ کو لندن سے وطن واپس پہنچیں گے ،پولیس کی جانب سے کارکنوں کو استقبال کیلئے ائیر پورٹ جانے سے روکنے کیلئے لاہور سمیت صوبہ بھر میں(ن) لیگ سے وابستگی رکھنے والے غیر فعال بلدیاتی نمائندوں ، متحرک سمجھے جانے والے رہنمائوں اور کارکنوں کی گرفتاریوں کا سلسلہ شروع ہو گیا، کارکنوں کی بڑی تعداد طے کی گئی حکمت عملی کے تحت ائیر پورٹ پہنچنے اور گرفتاری سے بچنے کیلئے روپوش ہو گئی جن کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جارہے ہیں ،پولیس نے شہر کے داخلی اور خارجی راستوں اور مختلف شاہراہوں کے اطراف پر کنٹینرز کھڑے کر دئیے جبکہ بیرئیر اور خار دار تاریں بھی پہنچا دی گئیں۔ مسلم لیگ (ن) کے مطابق پارٹی قائد نواز شریف محمدنواز شریف اور ا ن کی صاحبزادی مریم نواز آج ( جمعہ) کو لندن سے وطن واپس پہنچیں گے۔ نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم لندن سے براستہ ابو ظہبی لاہور آئیں گے او ران کا طیارہ جمعہ(آج) شام سوا چھ بجے ائیر پورٹ پر لینڈ کرے گا۔ میڈیا رپورٹس میں ذرائع کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ نواز شریف کی ابو ظہبی میں قیام کے دوران اہم ملاقاتیں بھی متوقع ہیں اور ان کے ہمراہ (ن) لیگ کے رہنمائوں ،پاکستان سمیت دیگر ممالک کے صحافی بھی لاہور آئیں گے جبکہ بعض ممالک کے سفارتکاروں کی آمد کے حوالے سے بھی بتایا جارہا ہے۔ دوسری طرف (ن) پولیس کی جانب سے گرفتاریوں کا سلسلہ شروع ہونے کے بعد مرکزی رہنمائوں نے آئندہ کی حکمت عملی کیلئے اجلاس منعقد کئے جس میںنگران حکومت کے فیصلے کی مذمت کرتے ہوئے شدید تشویش کا اظہار کیا گیا۔ پولیس کی جانب سے بدھ کی رات سے (ن) لیگ سے وابستگی رکھنے والے غیر فعال بلدیاتی نمائندوںاور متحرک سمجھے جانے والے رہنمائوں اور کارکنوں کی گرفتاریاں شروع کر دی گئی ہیں اور درجنوں کارکنوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ حکمت عملی کے تحت کئی رہنما اور کارکن روپوش ہو گئے ہیں جو آج جمعہ کے روز ہر صورت ائیر پورٹ پہنچنے کی کوشش کریں گے ۔پولیس کی جانب سے رہنمائوں اور کارکنوں کے گھروں پر چھاپوں کا سلسلہ گزشتہ روز بھی جاری رہا اور مبینہ طو رپر کئی مقامات پر اہل خانہ سے بدتمیزی کی شکایات بھی سامنے آئیں۔ لاہور کے علاوہ پنجاب کے دیگر اضلاع میں بھی پولیس کی جانب سے (ن) لیگ سے وابستگی رکھنے والے رہنمائوں اور کارکنوں کے گھروں پر چھاپے مار کر گرفتاریاں کی جانے کی اطلاعات ہیں ۔ پولیس کی جانب سے لاہور سمیت دیگر بڑے شہروں کے داخلی اور خارجی راستوں کے اطراف میں کنٹینرز کھڑے کر دئیے ہیں جبکہ بیرئیرز اور خار دارتاریں بھی پہنچا دی گئی ہیں۔ لاہور میں مختلف شاہراہوں کے اطراف پر بھی کنٹینرز کھڑے کر کے دئیے گئے ہیں جنہیں حکمت عملی کے تحت کارکنوں کو روکنے کے لئے راستوں کی بندش کے لئے استعمال میں لایا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق (ن) لیگ کی جانب سے بھی ائیر پورٹ پہنچنے اور رکاوٹوں کو ہٹانے کے لئے حکمت عملی مرتب کی جارہی ہے ۔مسلم لیگ کے دوسرے صوبوں سے تعلق رکھنے والے رہنما اور کارکن بھی لاہور پہنچنا شروع ہو گئے اور بتایا گیا ہے کہ یہ تمام لوگ عام مسافروں کے روپ میں لاہور پہنچنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق حراست میں لیے گئے لیگی کارکنوں میں فیصل ٹائون تحفظ امن کمیٹی کے چیئرمین عاشرجٹ، کاہنہ سے مسلم لیگ (ن) کے وائس چیئرمین محمد شفقت، یو سی 98 چیئرمین مزمل گجر، چیئرمین یوسی 78سید عامر شاہ گلشن راوی، یو سی 48کے چیئر مین چودھری محمد علی گجر، یو سی 59کے چیئر مین بائو محمد رفیق، یو سی 98 سے چیئرمین مزمل گجر شامل ہیں۔اس کے علاوہ فیروزوالہ یوسی 2مسلم لیگ (ن) کے چیئرمین شیخ کاشف، یوسی 4کے ساجد چوہان اور جوہر ٹائون سے مسلم لیگ (ن) کے چیئرمین ملک نثار احمد کھوکھر کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے۔ پولیس کی جانب سے یو سی 66کے چیئرمین اویس چیمہ یوسی 59سے بائو رفیق گجر ،یوسی 65سے اویس بشیر کو گرفتار کر کے تھانہ اسلام پورہ میں بند کر دیا ۔چیئرمین یوسی 205مزمل گجر،،چیئرمین یوسی 209توصیف قریشی،اقلیتی رہنما عارف صادق،کونسلرسید وقار شاہ اور دیگر کارکنوں کو بھی گرفتار کر کے تھانوں میں بند کر دیا گیا ۔پولیس نے یو سی 33یکی گیٹ وائس چیئرمین احمد رشید بٹ کے دفتر اور فیروزوالہ شاہدرہ پولیس نے مسلم لیگ (ن) کے چئیرمینز اور وائس چیئرمینز کے گھروں پر چھاپے مارے جبکہ مزید گرفتاریوں کے لیے چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے صدر محمد شہباز شریف نے کارکنوں کی گرفتاریوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جیلوں اور قید و بند کی صعوبتوں سے ڈرنے والے نہیں، نواز شریف کا استقبال کرنا آئینی اور قانونی حق ہے۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے استقبال کے لیے کارکنوں کے ہمراہ 13جولائی کو ایئرپورٹ پہنچوں گا اور کارکن دوران استقبال سرکاری املاک کو نقصان نہیں پہنچائیں گے۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ پرامن طریقے سے نواز شریف کا استقبال کریں گے جبکہ کارکنوں کی گرفتاریاں الیکشن کی شفافیت پر سوال اٹھا رہی ہیں اور پارٹی صدر کی حیثیت سے کارکنوں کی گرفتاریوں پر خاموش نہیں بیٹھوں گا۔انہوں نے کہا کہ شفاف انتخابات وقت کی ضرورت ہیں اور تمام جماعتوں کو برابری کی بنیاد پر انتخابی مہم چلانے کا موقع ملنا چاہیے۔شہباز شریف نے مطالبہ کیا کہ الیکشن کمیشن لیگی کارکنان کی گرفتاری کا نوٹس لے۔مسلم لیگ (ن) کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ رکاوٹوں اور گرفتاریوں کے باوجود مسلم لیگ (ن)کے قائد میاں نواز شریف کا فقیدالمثال استقبال ہو گا ۔مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف اظہاریکجہتی مارچ کی قیادت کریں گے۔ا نہوں نے کہا کہ اظہار یکجہتی مارچ بعد نماز جمعہ شہباز شریف کی قیادت میں روانہ ہو گا جو مختلف راستوں سے ہوتا ہوا ائیر پورٹ پورٹ پہنچے گا ۔

ہمارے بارے میں جاننے کے لئے نیچے دئیے گئے لنکس پر کلک کیجئے۔

ہمارے بارے میں   |   ضابطہ اخلاق   |   اشتہارات   |   ہم سے رابطہ کیجئے
© 2018 All Rights of Publications are Reserved by Daily Subh.
Developed by: SuperWebz.com
تمام مواد کے جملہ حقوق محفوظ ہیں © 2018 روزنامہ صبح۔